• ارشد شریف قتل کیس: سپریم کورٹ کا ایس جے آئی ٹی بنانے کا حکم

    اشتہارات
  • عمران خان نے کہا جو ہوا معاف کرنے کو تیار ہوں، مذاکرات کے راستے کھولے جائیں:بیرسٹر گوہر علی خان

    چیئرمین پی ٹی آئی بیرسٹر گوہر کا کہنا ہے بانی پی ٹی آئی عمران خان مذاکرات اور ان کے ساتھ جو ہوا اسے معاف کرنے کے لیے تیار ہیں۔

    اڈیالا جیل کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے بیرسٹر گوہر کا کہنا تھا آج وکلاء کی بانی پی ٹی آئی سے ملاقات ہوئی جس میں عمران خان نے کہا بیٹوں سے ان کی بات نہیں کروائی جا رہی۔

    بیرسٹر گوہر کا کہنا تھا بانی پی ٹی آئی کئی بار کہہ چکے میرے ساتھ جو ہوا معاف کرنے کو تیار ہوں، مذاکرات کے راستے کھولے جائیں، آئین اور قانون کے دائرے میں رہتے ہوئے بات چیت کے لیے تیار ہیں۔

    چیئرمین پی ٹی آئی کا کہنا تھا سربراہ پشتونخوا ملی عوامی پارٹی محمود خان اچکزئی سے بات کرکے مذاکرات کا آغاز کریں گے، مذاکرات کرنا پی ٹی آئی کا اپنا فیصلہ ہے لیکن محمود خان اچکزئی اور دیگر جماعتوں کے ساتھ اتحادہے انھیں اعتماد میں لیں گے، مذاکرات الائنس کی سطح پر بھی ہوں گے، پی ٹی آئی خود بھی آغازکر سکتی ہے۔
    بیرسٹر گوہر علی خان کا کہنا تھا مذاکرات کے سوا کوئی آپشن نہیں ہم نے مذاکرات سے کبھی انکار نہیں کیا، برف پگھل رہی ہے ہم چاہتے ہیں حالات بہتر ہو جائیں، ہماری مذاکرات کی پیشکش کو کسی ڈیل سے تعبیر نہ کیا جائے۔

    ایک سوال کے جواب میں چیئرمین پی ٹی آئی کا کہنا تھا بانی پی ٹی آئی نے سپریم کورٹ کو مذاکرات کے لیے کوئی خط نہیں لکھا، سپریم کورٹ کے مذاکرات کے آپشن کا جواب بھی پی ٹی آئی دے گی۔

    یاد رہے کہ پی ٹی آئی کا دو ٹوک مؤقف رہا ہے کہ عمران خان نے کہا ہے مسلم لیگ ن، پیپلز پارٹی اور ایم کیو ایم پاکستان کے علاوہ ہر کسی سے بات ہو سکتی ہے۔

    دوسری جانب پی ٹی آئی رہنماؤں کا مؤقف ہے کہ ہم حکومت کے بجائے اصل اقتدار جن کے پاس ہے ان سے بات چیت کریں گے۔

    ادھر وزیراعظم کے مشیر رانا ثناء اللہ نے ایک بیان میں کہا تھا ہم تحریک انصاف کے ساتھ مذاکرات کے لیے تیار ہیں لیکن اس کے لیے عمران خان کو اپنا منہ رکھنا پڑے گا۔

    29 مناظر